پی ایس او کی اجارہ داری ختم 45 آئل کمپنیوں کو پٹرولیم مصنوعات درآمد کرنیکی اجازت

اسلام آباد(صباح نیوز)وزیراعظم شاہدخاقان عباسی نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں کوڈی ریگولیٹ کرنے کاتاریخی فیصلہ کیاہے۔ یکم نومبر2017سے پیٹرول کی درآمد پرپی ایس او(پاکستان اسٹیٹ آئل)کی اجارہ داری ختم کردی ہے اور پاکستان کی 45آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کوپیٹرولیم مصنوعات درآمد کرنے کی فوری اجازت دے دی ہے جبکہ ڈیزل کی درآمد کی45آئل مارکیٹنگ کمپنیوں کو یکم دسمبر2017سے اجازت دینے کی منظوری دی گئی۔نئی پالیسی کے تحت کیروسین آئل (مٹی کاتیل)جوغریب عوام چولھاجلانے کے لیے استعمال کرتے ہیں وہ بدستورحکومت پاکستان کی اسٹیٹ آئل کمپنی ہی درآمدکرسکے گی۔اسی طرح فرنس آئل جو واپڈاکے پاورپلانٹ بجلی پیداکرنے کے لیے استعمال کرتے ہیںان کی امپورٹ حسب سابق سرکاری شعبے میں رکھے جانے کا فیصلہ کیاہے اسی طرح جیٹ فیول جوقومی فضائی کمپنی پی آئی اے وغیرہ بطورایندھن استعمال کرتی ہیں۔ان کی امپورٹ بھی صرف پی ایس او ہی کرسکے گی۔ نجی45آئل مارکیٹنگ کمپنیوں نے یکم نومبر سے پیٹرول کی درآمد کے ایل سی کھولنا شروع کردیتے ہیں۔ یکم دسمبر سے 45آئل کمپنیاں ڈیزل کی درآمد بھی خود کرسکیں گی۔