حضرت عیسیٰؑ کی اہانت پر اسرائیلی ٹی وی کیخلاف غم و غصے کا اظہار‘ شدید مذمت

مکہ مکرمہ (مبشر لون استادانوالہ سے) اسلامی کانفرنس تنظیم (او آئی سی) رابطہ عالم اسلامی\\\' فقہ اکیڈمی اور انٹرنیشنل ختم نبوت موومنٹ نے حضرت عیسیٰؑ کی اہانت پر اسرائیلی ٹی وی 10 کے خلاف شدید غم و غصے کا اظہار کیا ہے۔ او آئی سی کے سیکرٹری جنرل پروفیسر اکمل الدین احسان اوغلو نے اسرائیلی ٹی وی کے اس پروگرام کی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے جس میں حضرت عیسیٰؑ اور ان کی والدہ محترمہ حضرت مریمؑ کی توہین کی گئی ہے۔ اوغلو نے اس امر پر زور دے کر کہا کہ او آئی سی آسمانی مذاہب پیغمبروں اور مذہبی ہستیوں کی کسی بھی شکل میں توہین کے شدید خلاف ہے۔ انہوں نے عیسائی برادری کے ساتھ اظہار ی کجہتی کرتے ہوئے اسرائیلی ٹی وی کی مذمت کی اور تمام افراد\\\' اداروں اور تنظیموں سے کہا کہ وہ آسمانی مذاہب کی تصویر مسخ کرنے والی کسی بھی کوشش کے خلاف مشترکہ موقف اختیار کریں۔ رابطہ عالم اسلامی کے سیکرٹری جنرل ڈاکٹر عبداللہ عبدالمحسن الترکی نے علامیہ جاری کر کے واضح کیا ہے کہ رابطے کو حضرت عیسیٰؑ اور ان کی والدہ ماجدہ کی توہین والے اسرائیلی ٹی وی کی مذمت کرتا ہے۔ رابطہ تمام مسلمانوں کی جانب سے اس موقف کو ریکارڈ پر لانا چاہتا ہے کہ ہم سب حضرت عیسیٰؑ کو برگزیدہ مانتے ہیں۔ وہ اللہ تعالیٰ کے عظیم پیغمبر ہیں اور ان کی والدہ حضرت مریمؑ پاکباز خاتون ہیں اور قرآن مجید میں ان کی تعریف کی ہے۔ رابطہ نے توجہ دلائی کہ اظہار رائے کی آزادی کو بہانہ بنا کر کسی بھی پیغمبر اور آسمانی مذہب کی توہین درست نہیں۔ اس قسم کی حرکتوں سے عوام میں نفرت اور کدورت گہری ہوتی ہے۔ مذاہب کے پیروکاروں کے درمیان فتنے پھیلتے ہیں۔ اسلامی فقہ اکیڈمی اور انٹرنیشنل ختم نبوت موومنٹ نے او آئی سی اور رابطے کے موقف کی حمایت کرتے ہوئے واضح کیا کہ کسی بھی پیغمبر یا نبی کی توہین کرنے والا شخص اسلام کے دائرے سے خارج ہو جاتا ہے۔ اسرائیلی ٹی وی کے پروگرام کو آسمانی مذاہب اور ان کی مقدس ہستیوں کے خلاف گھناﺅنے حملے سے تعبیر کیا اور اقوام متحدہ نیز دنیا بھر کے ممالک سے اسے قانوناً جرم قرار دینے کے مطالبہ کا اعادہ کیا۔