آصف علی زرداری کو کردار ادا کرنا ہوگا

مکرمی! موجودہ حکمرانوں کی سیاست چالاکی پر مبنی ہے۔ حکمران اور سیاستدان عوام کی بھلائی کے لئے دیانت اور دانش کا مظاہرہ نہیں کر رہے ہیں اس وقت پاکستان کو تاجر‘ سرمایہ دار اور جاگیردار چلا رہے ہیں۔ یہ حکمران صرف اپنے طبقے کے مفادات کے لئے پالیسی ترتیب دے رہے ہیں۔ فوجی ڈکیٹروں کی وجہ سے ہم ایک بار اس ملک کو دولخت کر چکے ہیں۔ جمہوری اداروں کے برباد ہونے کی وجہ سے پاکستان کی حالت بحران کا شکار چلی آ رہی ہے۔ یہ بھی ایک حقیقت ہے کہ پاکستان کو بحران کا شکار کرنے میں صرف فوج ہی تنہا ذمہ دار نہیں‘ اب حکمران اور سیاستدان بھی وہی کچھ کر ہے ہیں۔ جو پرویز مشرف اور جنرل ضیاء الحق کرتے آئے تھے۔ پاکستان کے حکمران اور عسکری قیادت امریکی شکنجے میں بری طرح پھنس چکی ہیں۔ امریکی شکنجے سے نکلنے کے لئے حکمران خلوص اور دیانتداری کا مظاہرہ نہیں کر پا رہے۔ اسی وجہ سے عوام اور حکمرانوں کے درمیان دوری پیدا ہو رہی ہے۔ صدر آصف علی زرداری کو اپنا ظاہر و باطن میں انصاف لانے کی ضرورت ہے۔ اگر انہوں نے ایسا نہ کیا تو ان کی صدارت رہے گی نہ ہی پیپلز پارٹی کی ساکھ بچ پائے گی۔ جنوبی پنجاب کو علیحدہ صوبہ بنانے کا منصوبہ بھی ایک سوچی سمجھی منصوبہ بندی ہے۔ اس پر بھی آصف علی زرداری کو کردار ادا کرنا ہوگا۔ ورنہ معاملات بہت جلد ہاتھ سے نکل جائیں گے۔ زرداری صاحب کے گرد مشرف کی طرح خوشامدیوں کا ایک ٹولہ جمع ہو چکا ہے۔ اس بحرانی کیفیت میں آصف زرداری کو ان خوشامدیوں کا کوئی نہ کوئی انتظام کرنا ہوگا۔ طوفان کو اب بھی آصف علی زرداری تھام سکتے ہیں۔(اجمل شبیر لاہور فون نمبر 0331-4977625 )