جنرل راحیل کو درپیش چیلنجز

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر

مکرمی ! جنرل راحیل شریف کی تقرری کو محب وطن حلقوں میں خوب سراہا جا رہا ہے اور امید کی جا رہی ہے کہ وطن کو قومی سلامتی کے حوالے سے جن کڑے چیلنجوں کا سامنا ہے ان سے نمٹنے کیلئے وہ اپنی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کا بھرپور استعمال کریں گے۔ دوسرا اہم ایشو طالبان سے مذاکرات کا ہے کیونکہ وزیراعظم سمیت تمام سیاسی پارٹیوں کی یہ کوشش ہے کہ ملک امن و آشتی ہو اور معیشت کی ڈوبتی ہوئی نبضیں بحال ہو سکیں۔ یہ امر باعث اطمینان ہے کہ طالبان کی جانب سے جنرل راحیل کے چنائو کا خیرمقدم کیا گیا ہے اور انہوں نے مذاکرات کے بارے میں سوچنے کا عندیہ دیا ہے۔ مبصرین کے مطابق اگر جنرل راحیل کی جگہ جنرل ہارون اسلم کی تقرری عمل میں لائی جاتی تو شاید پھر طالبان کے ساتھ بامعنی مذاکرات کا خواب کبھی بھی پورا نہ ہوتا۔ اس حوالے سے دیکھنا یہ ہے کہ جنرل صاحب کی ترجیحاتکیا ہیں۔ (کامران نعیم صدیقی ۔ لاہور)