پارک کی تعمیر

مکرمی! آج جہاں کنعان پارک موجود ہے وہاں تقریباً چالیس سال پیشتر گندگی کے ڈھیر، گندے پانی کے جوہڑ جو مچھروں کا بسیرا اور مٹی کے اُونچے نیچے ٹیلوں پر مشتمل تھا وہاں پر کنعان پارک کی تجویز اُس وقت کے ڈپٹی کمشنر مظفر قادر سی ایس پی نے دی جسکی تکمیل چودھری محمد شوکت تارڑ پی سی ایس اے ڈی ایم و چیئرمین بلدیہ کی کوششوں سے ہوئی جہاں پر شہر کے لوگ آج سیر و تفریح کیلئے آتے ہیں اور خصوصاً عیدالفطر اور عیدالاضحٰی پر لوگوں کا ہجوم دیدنی ہوتا ہے اور جشن بہاراں کا سماں دکھائی دیتا ہے۔ کنعان پارک کے اختتام پُل بازار سے ڈھاوے والی جھال تک نہر لوئر باری دوآب کے کنارے گندگی کے ڈھیر ہی ڈھیر پڑے ہیں اور روز بروز کوڑا کرکٹ میں اضافہ ہی ہوتا چلا جا رہا ہے۔ کمشنر ساہیوال ڈویژن طارق خاں اور ڈپٹی کمشنر محمد خاں کھچی سے ساہیوال کے شہری پُرزور مطالبہ کرتے ہیں اس جگہ پر کنعان پارک کی طرز پر گندگی کے ڈھیر صاف کر کے ایک پارک بتایا جائے جہاں ساہیوال کے شہریوں کو فریدیہ پارک اور کنعان پارک کے بعد ایک اور پارک میں سیر و تفریح کا موقعہ ملیگا وہاں پر نہر لوئر باری دوآب کے حُسن میں مزید اضافہ ہو گا۔ مظفر قادر اور شوکت تارڑ کے بعد ساہیوال کو خوبصورت بنانے میں کمشنر طارق خاں اور ڈپٹی کمشنر محمد خاں کھچی کے نام سنہری حروف میں لکھے جائیں گے۔ (رانا ریاض ساہیوال)