قومی تعمیر و ترقی میں افواج پاکستان کا حصہ

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر
قومی تعمیر و ترقی میں افواج پاکستان کا حصہ

19 مارچ کو سینیٹ کی ’’امور داخلہ کی کمیٹی‘‘ نے خدشہ ظاہر کیا تھا کہ ملک میں مارشل لاء لگ سکتا ہے‘‘ 20 مارچ کو وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف نے میانوالی میں کہا تھا کہ ’’ملک کو سنگین چیلنجز کا سامنا ہے ہمیں فوری اور سخت فیصلے کرنا ہونگے۔ تاہم سوال یہ ہے کہ اگر میاں نواز شریف فوج کو اس بات پر پابند کرنا چاہتے ہیں کہ وہ آئندہ ملک میں مارشل لاء نہ لگائے تو پھر ’’مقدمہ‘‘ صدف فوج کے سربراہ پر ہی کیوں؟ ان لوگوں کو وزیر اعظم جان بوجھ کر نظر انداز کر ہے ہیں جو کبھی جنرل پرویز مشرف کی کابینہ کا حصہ تھے جیسے وہ آج جناب نواز شریف کا ہیں۔ تو کیا مارشل لاء فوج کے لئے ’’حرام‘‘ اور نواز شریف کے ساتھ بیٹھے کابینہ وزیروں کے لئے ’’حلال‘‘ ہے۔(رضیہ سلطانہ)