سندھ کارڈ یا مظلوم کارڈ

مکرمی! مضبوط اور آزاد عدلیہ معرض وجود میں آ چکی ہے سیاستدانوں، حکمرانوں کو اب یہ بات سمجھ میں آ جانی چاہئے۔ جیالا پن کو ہوا دینے سے پیپلز پارٹی سمیت تمام سیاسی قوتیں برباد ہوجائیں گی اس لئے ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا وقت کی اہم ضرورت ہے۔ سندھ کارڈ، یا مظلوم کارڈ اب نہیں چلے گا کیونکہ عوام باشعور ہو چکے ہیں اور زرداری صاحب بھی یقیناً سمجھتے ہوں گے کہ وہ ذوالفقار علی بھٹو اور بے نظیر بھٹو جیسے سیاستدان نہیں ہیں۔ اس لئے اب زرداری کو ہی راستہ نکالنے کی ترکیب کرنی ہوگی۔ اداروں میں تصادم ہوا تو اس سے تیسری قوت کی راہ ہموار ہوگی۔ طاقت اور اقتدار کے اس خوفناک کھیل میں صدر زرداری کیا فیصلہ کرتے ہیں اور کون سے راستے کا انتخاب کرتے ہیں، فیصلہ اب صدر زرداری کے ہاتھ میں ہے۔ اجمل شبیر لاہور 0308-7624813