میٹروبس کے ملازمین کا رویہ

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر
میٹروبس کے ملازمین کا رویہ


مکرمی! جناب میں آپکی توجہ ایک اہم مسئلہ کی طرف کروانا چاہتی ہوں، میٹروبس جو کہ مسافروں کے لئے خوشی کا باعث بنی ہوئی ہے کبھی کسی نے یہ سوچا ہے کہ اسکیلٹر کے پاس کھڑا شخص یعنی اس ملازم کی کیا ڈیوٹی ہے آج میں نے ایک اسٹیشن پہ کھڑے چار اشخصاص کو دیکھا جنکا کام مسافروں کو گائیڈ لائن دینا ہوتا ہے، کیونکہ میٹروبس میں ان پڑھ لوگ بھی سفر کرتے ہیں۔ آج میں نے اپنی آنکھوں سے دیکھا اور کانوں سے سنا دیکھ کر حیرت بھی ہوئی کہ ان ملازموں کو تنخواہ اس لئے نہیں دی جاتی کہ وہ آنے جانے والے مسافروں پر گانے گائیں اور قہقے لگائیں۔ اس لئے میری محترم وزیر اعلیٰ پنجاب سے اپیل ہے کہ ایسے ملازمین جوکہ اسکیلٹر پر کھڑے ہو کر اپنی ڈیوٹی کو انجام دینے کی بجائے لوگوں کو اپنی ہنسی مذاق اور گانوں کا نشانہ بناتے ہیں ان کے خلاف کارروائی کی جائے تاکہ آنے جانے والے مسافروں کو اسکیلٹر سے گزرتے وقت کوئی مشکل کا سامنا نہ ہو۔ (کرن شفاقت، شعبہ ابلاغیات گورنمنٹ ایم اے او کالج لاہور)