نو از شریف کے ہاتھوںپاکستان کی بیحرمتی

مکرمی! میاں نواز شریف نے کہا: جس رب کو بھارتی پوجتے ہیں ہم بھی اسی کو پوجتے ہیں۔ میاں نواز شریف کا یہ مہمل بیان ہے کہ ا نہوں نے ہندو اور مسلم کو ایک لڑی میں پرو دیا جبکہ مسلمانوں کا نظریہ الگ ہے اور ہندوﺅں کا الگ ہے۔ مسلمان اللہ کی عبادت کرتے ہیں جبکہ ہندو بتوں کی پوجتے کرتے ہیں۔ نو از شریف بچے ہیں کیا؟ کہ ان کو اس بات کی یاددہانی کرانی پڑے گی کہ ہمارے ملک کی بنیاد اسی بات پر رکھی گئی تھی کہ ہندو گائے کی پوجا کرتے ہیں اور مسلمان صرف ایک رب کی عبادت کرتے ہیں۔ مسلمانوں نے اس ملک کو حاصل کرنے کیلئے اپنی جان ومال اور عزتوں کی قربانیاں دی ہیں اور نو از شریف نے آج اس نقطہ پہ کوئی فرق نہیں رہنے دیا جس نقطہ پہ جداگانہ وطن کا خو اب دیکھا گیا تھا آج انہوں نے اس نظریے کو رد کر دیا ہے۔ ان کو خدا خوفی کرنی چاہئے کیونکہ مسلمان رب کی عبادت کرتے ہیں اور ان کو ا پنی قوم سے بھی معافی مانگنی چاہئے۔ قائداعظمؒ نے فرمایا تھا کہ کشمیر پاکستان کی شہہ رگ ہے جب تک پاکستان کشمیر کو آزاد نہیں کروا لیتا تب تک اس کی تکمیل نا مکمل ہے۔ زوبیہ عتیق)