ریلوے انجن

مکرمی! یہ حقیقت ہے کہ پاکستان ریلوے میں80فیصد لوکوموٹوز (ریلوے انجن) اپنی عمر پوری کر چکے ہیں۔ اخباری اطلاعات کے مطابق جمہوریہ چین سے جو 69 لوکوموٹوز درآمد کئے گئے تھے ان میں نصف کے قریب ناقص میٹریل کے سبب سروس کے قابل نہیں رہے۔ جس کی وجہ سے ریلوے انتظامیہ کو متعدد ٹرینیں منسوخ کرنا پڑیں۔ اس طرح سے لوکوموٹوز کی کمی سے پیدا شدہ بحران میں مزید اضافہ ہو گیا۔ اب نئی منصوبہ بندی کے تحت حکومت 150 نئے ڈیزل کوموٹوز کی خریداری کا ارادہ رکھتی ہے۔ جس کے لئے ٹینڈر جاری کئے جا رہے ہیں۔ اس سلسلے میں مندرجہ بالا صورتحال کی پیش نظر نہایت محتاط رویہ اپنانے کی ضرورت ہے۔ تاکہ لوکوموٹوز کی خریداری کے ساتھ ساتھ ایسی پالیسی بھی اختیار کی جائے جو آن لائن فلیئر سیکشن بلاک اور ٹرینوں کی تاخیری اسباب کا بھرپور تدارک کر سکے۔
(شفیق الحسن کاظمی ای ایل سی ڈی (ر) 0333-434373)