’’ہائے اس زود پشیماں کا پشیماں ہونا‘‘

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر
’’ہائے اس زود پشیماں کا پشیماں ہونا‘‘

مکرمی! پی ایس ایل کا فائنل الحمداللہ بخیروخوبی انجام کو پہنچ گیا۔ خطرات‘ خدشات اور خوف و ہراس کی فضا میں پی ایس فائنل کا انعقاد کسی معجزے سے کم نہیں۔ بلاشبہ خوف و ہراس کی فضا موجود تھی اورحالات کو پیش نظر رکھتے ہوئے سابق کپتان اور تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے پی اس ایل کا فائنل لاہور میں کروانے کو پاگل پن قرار دیدیا تھا اور وہ آخری وقت تک میچ کروانے کی مخالفت کرتے رہے۔ آخر حکومت نے تمام خوف و خدشات کو رد کرتے ہوئے عوامی جوش و جذبے کو برقرار رکھنے کیلئے میچ کرا دیا۔ اب جبکہ پی ایس ایل کا فائنل بخیروخوبی انجام کو پہنچ گیا ہے تو نہ جانے کپتان کو کیا سوجھی کہ پھر زود رنج بیان دیدیا اور غیرملکی کھلاڑیوں کو ’’پھٹیچر‘‘ قرار دیدیا۔ کپتان کو چاہئے کہ اب غصہ تھوک دیں اورجو ہو گیا اسے برداشت کریں اور اپنے چاہنے والوں کو دل برداشتہ نہ کریں۔(رائو محمد محفوظ آسی۔ ٹائون شپ لاہور)