چونگی ملازمین کی پریشانی

مکرمی!1999ءمیں حکومت نے محصول چونگی اور ضلع ٹیکس کا خاتمہ کر دیا تھا جس سے ملازمین چونگی اور ضلعی ٹیکس ملازمین کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔ مالی مشکلات کے علاوہ بچوں کے تعلیمی کیریئر کو بھی شدید دھچکا لگا۔ سال 1999تا14 اگست 2001ءتک ملازمین نے جن مشکلات کا سامنا کیا اس کا اظہار الفاظ میں ناممکن ہے۔14 اگست 2001ءمیں مشرف حکومت نے نیا بلدیاتی نظام متعارف کرایا جس میں اربن یونین کونسلرز کا آغاز ہوا۔ اس طرح مذکورہ ملازمین کو یونین کونسلز میں ایڈجسٹ کر دیا گیا ملازمین نے سکھ کا سانس لیا۔ عرصہ9 سال بعد نیا بلدیاتی نظام ختم کرکے سابقہ بلدیاتی نظام بحال کرنے کی خبریں سننے میں آ رہی ہیں۔ اس طرح ملازمین کو شدید پریشانی لاحق ہے کہ ان کا مستقبل کیا ہوگا آج پھر تمام ملازمین اسی دوراہے پر کھڑے ہیں جہاں 1999ءمیں تھے۔ سابقہ بلدیاتی نظام کی بحالی کے ساتھ ساتھ ملازمین کی پریشانی کا خیال رکھتے ہوئے ان کے بارے میں بھی سوچا جائے۔ حکام بالا سے پرزور اپیل ہے کہ سابقہ بلدیاتی نظام کی بحالی کرتے ہوئے ملازمین مذکورہ بالا کو ایڈجسٹ کرکے فاقہ کشی کا شکار ہونے سے بچایا جائے۔(محمد فیاض بٹ ماہنیانوالہ چک14/RB تحصیل صفدر آباد ضلع شیخوپورہ)