یومِ اقبال .... (چودھری عبدالخالق)

اک مُلک ہے ہمارا‘ اک نام ہے ہمارا

اقبال تیری سوچ کو سلام ہے ہمارا
جاگو اے مسلمانو ‘پیغام تھا تمہارا
چین و عرب ہمارے‘ ہندوستان ہمارا
اپنے ہی من میں ڈوبو‘ اپنی خودی پہچانو
عزت سے جینا سیکھو‘ دُنیا کے مسلمانو
تُو نے حکیمِ ملت کی خوب مسیحائی
منزل کو ہم نے پایا ‘تیری تھی راہنمائی
افسوس سر اُٹھا کر چلنا ہمیں نہ آیا
مخلص ہو جو وطن سے وہ راہ نما نہ پایا
اے کاش ہم کو ایسا مل جائے کوئی رہبر
جنت نشاں وطن کو دکھلائے جو بنا کر