انسان کی عظمت کو ترازو میں نہ تولو

مکرمی! انسان کا نعم البدل کوئی دوسرا انسان نہیں ہو سکتا جو رشتہ جس سے بچھڑ جاتا ہے دوسرا رشتہ بچھڑنے والے کی جگہ کبھی نہیں لے سکتا جس کی ماں، باپ، بہن ، بھائی، بیٹا، بیٹی بچھڑ جاتا ہے دوسرے رشتوں کی موجودگی میں اس کی یعنی بچھڑنے والے کی کمی کبھی پوری نہیں ہوتی اگر کوئی قضاءالٰہی سے جدا ہوا تو اس کی قبر اس کی موجودگی کا ثبوت دیتی ہے۔ اس سے پیار کرنے والے غمگین تو ہوتے ہیں مگر صبر کرتے ہیں لیکن ایسے رشتے جو اچانک غائب ہو جاتے ہیں اور گھر والوں کو کچھ علم نہیں ہوتا کہ وہ کہاں ہیں کس حال میں ہیں زندہ بھی ہیں یا نہیں۔ ان پہ جو گزرتی ہو گی وہی جانتے ہیں آئے دن اخبارات اور ٹی وی یا ریڈیو پر سننے اور دیکھنے میں آتا ہے کچھ خواتین حضرات اور بچے اپنے پیاروں کی تصویریں اٹھائے حکومت سے پوچھ رہے ہوتے ہیں کہ ہمارا پیارا کہاں ہے؟ حکمران حکومت کے نشے میں مست جواب دینے کی بجائے انہیں دھتکارتے ہیں اور کوئی جواب دینے سے گریزاں ہیں۔ اولادِ آدم میں اس قسم کی بے حسی حیران کن ہے۔
(صوبیدار (ر) مختار احمد اعوان کوٹ لکھپت لاہور)