اولمپک ایسوسی ایشن میں اقتدار کی جنگ

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر

مکرمی!اولمپک ایسوسی ایشن کے لاہور دفتر پر سابق عہدیدران کے قبضے نے سپورٹس کی ترقی اور میرٹ پسند حکومت کی قلعی کھول دی ہے جس پراولمپک ایسوسی ایشن آف ایشیا نے پانچ سابق عہدیداران پر بیرون ملک جا کر ملک کی نمائندگی کرنے پر پابندی عائد کردی ہے اس واقعہ نے ملکی ساکھ کو زبردست نقصان پہنچایا اور کھیلوں کے فروغ کے عمل کو شدید دھچکا لگا ہے بڑی حیران کن صورتحال ہے کہ قبضہ کرنے والوں میں سابق ڈی آئی جی،سابق جسٹس ،آرمی کے سابق آفیسراور سینیٹر شامل ہیں اس قبضہ پر اولمپک ایسو ایشن نے نوٹس لے لیا ہے لیکن نہ تو ہماری نئی جمہوری حکومت توجہ دی اور نہ ہی آزاد عدلیہ نے کوئی نوٹس لیا اور چپ چاپ ملکی وقار کی پامالی پر آنکھیں موند کر مجرمانہ غفلت کی ہے مجھے نہیں لگتا کہ اس اہم معاملے پر کوئی تحقیقاتی کمیٹی یا جوڈیشل انکوائری ہوسکے جبکہ کوئی تو ہو جو اس سلسلہ کو روک سکے۔ اب وقت آگیا ہے کہ ہم اپنے ماضی سے سبق حاصل کرکے غلطیوں کا ازالہ کرنے کیلئے اپنا رول ادا کریں جبکہ حکومت اور آزاد عدلیہ کو اس پر سخت نوٹس لے کر ملک کو بدنام کرنے والوں کا سخت محاسبہ کرتے ہوئے عبرت کا نشان بنا دیں۔(چوہدری عبدالرزاق 101-Wہاوسنگ کالونی چیچہ وطنی)