نیشنل پلان ایکشن مہنگا ہوگیا

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر
نیشنل پلان ایکشن مہنگا ہوگیا

نیشنل پلان ایکشن کی منظور یکے بعد جیسے ہی حکومت نے اسکی کامیابی کیلئے مختلف خصوصاً تعلیمی اداروں کو اپنے حفاظتی انتظامات کرنے پر زور دیا تو حفاظتی انتظامات کے دوران استعمال ہونے والی اشیاء قیمتوں میں بے پناہ اضافہ ہوگیا اور مصنوعی قلت پیدا کردی گئی یہاں تک کہ سکیورٹی گارڈز تنخواہیں بھی دو گناہ زیادہ ہوگئی۔ خار دار تار جوکہ 100روپے کلو تھی وہ 300 روپے کلو ہوگئی۔ سٹیل ڈی ڈٹیکٹرز 1500 روپے سے 4500 روپے کا ہو گیا کلوز سرکٹ ٹی وی کی قیمتیں بھی زیادہ ہوگئی تعمیراتی مٹیریل اور مستری، مزدور نے بھی اجرت بڑھا دی۔ سرکاری تعلیمی اداروں کی چار دیواری اونچی کرنے میں محکمہ بلڈنگ والے بھی پیچھے نہ رہ سکے غرض کہ سکیورٹی پلان کے حوالے سے جس کا دائو لگا اس نے لگایا۔ یہی وجہ ہے کہ تادم تحریر تعلیمی اداروں کیلئے جو سکیورٹی پلان جاری ہوتا تھا وہ مکمل نہیں ہوسکا۔ پرائیوٹ تعلیمی اداروں ابھی تک نامکمل ہے گائوں کی سطح پر ایسے سکولز ہیں جن کی چار دیواری تک نہیں ہے حکومت کو چاہئے کہ وہ سکیورٹی آلات کی مصنوعی قلت ختم کر کے قیمتیں بڑھانے والوں کے خلاف کارروائی کریں ۔(پرنس عنایت خان ساہیوال )