ہم نے تاریخ سے سبق نہیں سیکھا

ایڈیٹر  |  مراسلات

مکرمی! ایئرمارشل اصغر خان کی کتاب ”ہم نے تاریخ سے سبق نہیں سیکھا“ کہ باب ”قائداعظم کو جیسے میں نے دیکھا“ میں بیان کیا گیا ہے کہ 14 اگست 1947ءکو گورنر ہاو¿س کراچی میں ہونے والی پُروقار تقریب میں محکمہ دفاع کے دیگر افسروں کے ساتھ ایئرمارشل (ر) اصغر خان بھی موجود تھے۔ کرنل اکبر خان جو بعد میں میجر جنرل ہوئے اور پنڈی سازش کیس میں ملوث ہونے کے الزام میں گرفتار ہوئے انہوں نے قائداعظم سے کہا کہ اعلیٰ عہدوں پر گورے افسروں کی تعیناتی سے اُن کی دل شکنی ہوئی ہے۔ قائداعظم نے اپنی انگلی اٹھا کر ”مت بھولنا کہ تم ریاست کے ملازم ہو، یہ ہمارا پبلک کے نمائندوں کا کام ہے کہ ملک کو کیسے چلانا ہے تمہاری ذمہ داری اپنے سویلین حاکموں کا حکم ماننا ہے“ معمار پاکستان قائداعظم کے فرمان کے برعکس عمل پیرائی کا نتیجہ .... آج کے ملکی حالات ۔(رانا احتشام ربانی پوسٹ بکس نمبر 01 جی پی او اوکاڑہ)