قانون توہین رسالت اور جسٹس(ر) ناصرہ جاوید اقبال کا بیان

مکرمی! مورخہ 23نومبر 2010ء کو نوائے وقت اخبار میں قانون توہین رسالت کے بارے میں جسٹس(ر)ناصرہ جاوید کا بیان پڑھا۔انہوں نے توہین رسالت کے قانون کو غیر اسلامی قراردیتے ہوئے کہا کہ یہ قرآن و سنت کے مطابق نہیںہے۔اس لئے اس کا خاتمہ ضروری ہے۔بڑے افسوس کی بات ہے کہ ایک ایسے عظیم اسلامی گھرانے کی بہو کہ جس کے سربراہ علامہ اقبالؒ نے اپنی ساری زندگی عشق رسولؐ اور تحفظ ناموس رسالت کی خاطر گزاردی۔آج اسی گھرانے کی بہو توہین رسالت کے قانون کو غیر اسلامی کہہ رہی ہے۔ حالانکہ یہ قانون تو قرآن و سنت کے بالکل مطابق ہے اور اس میں کسی قسم کے ردوبدل کی گنجائش نہیں ہے۔ (زاہد حسین صدیقی ولد محمد ابراہیم۔ ننکانہ موڑ بچیکی تحصیل و ضلع ننکانہ صاحب)