درس شہادت حضرت امام حسین ؓ

مکرمی ! اس وقت امت مسلمہ پر دہشت گردی کے خاتمے کے نام پر جو عذاب مسلط ہے اسے خصوصاً پاکستان کی سلامتی اور استحکام کے لیے انتہائی گہرے خطرات پیدا کر دئیے ہیں اورقوم کو اس سے نمٹنے کے لیے حسینی فکر سے شعور لینا ہوگا۔ ملک بیرونی دہشت گردوں کا شکار ہے اور اس دہشت گردی کا ماحول بنا کر اسے نقطہ عروج پر لے جانے والے یزیدی فکر کے نمائندے ہیں۔آج پاکستانیوں کو اپنے کل کو محفوظ بنانے کے لیے دہشت گردی کے اس ناسُور کو جڑ سے اکھاڑنا ہو گا اورامن کے دشمنوں کے ساتھ مذاکرات نہیں بلکہ ان کا مکمل خاتمہ کرنا ہوگا۔ خودکش حملہ آوروں اور دہشت گردوں کا اسلام اور حسینیت سے کوئی تعلق نہیں۔ یہ انسانیت کے قاتل ہیں۔ انسانیت کے ان قاتلوں کو کیفرکردار تک پہنچانے کے لیے ہر فرد کو اپنی اپنی سطح پر کردار ادا کرنا ہوگا تاکہ وطن عزیز میں دائمی امن بحال ہو سکے۔ ایسا تبھی ممکن ہو گا جب پاکستانی قوم حضرت امام حسین ؓ او ر ۔۔۔ ذواتِ قدسیہ سے قلبی محبت کا تعلق استوار کر لے گی۔ اسی کی برکت سے انہیں حسینی فکر نصیب ہو گا۔ یزید یت کے فتنہ سے مکمل آگاہی اوراسے شکست سے دوچارکرنے کا شعور اور حکمت عملی بھی سمجھ آئے گی۔ (رانا محمد ناصر ۔ موبائل 0302-6659326)