آزاد کشمیر حکومت کا ’’ہتک عزت‘‘ کا متنازعہ قانون!

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر
آزاد کشمیر حکومت کا ’’ہتک عزت‘‘ کا متنازعہ قانون!

مکرمی! آزادکشمیر حکومت کی کابینہ نے دہشتگردی کیخلاف پاکستان کے نیشنل ایکشن پلان کو آزادکشمیرمیں نافذکرنے،کائونٹر ٹیرارزم ڈیپارٹمنٹ کے قیام پاور فائونڈیشن آرڈیننس، الیکشن (ترمیمی) آرڈیننس اور ہتک عزت قوانین کی باقاعدہ منظوری دی ہے جنہیں آئندہ اجلاس میں قانون ساز اسمبلی میں منظوری کے لیے پیش کیا جائے گا۔یاد رہے کہ آزاد کشمیر اسمبلی کا اجلاس 20جنوری کو طلب کیا گیا ہے۔کابینہ نے ہتک عزت کے قانون کی منظوری دی ہے۔حکومت کو تحریک آزادی کشمیر کے بیس کیمپ میں آزادی اظہار پر پابندی کیلئے اخبارات و جرائد کو نت نئے قوانین اور ضابطوں کا پابند نہیں بنانا چاہئے ۔’مناسب یہی ہے کہ آزاد کشمیر حکومت اس معاملے میں ترامیم کے نکات پر عوامی مشاورت کا عمل مکمل کرے اور اطلاعات تک رسائی کا قانون آزاد کشمیر میں اسمبلی سے منظور کیا جائے۔آزاد کشمیر حکومت کو ہتک عزت کے مجوزہ قانون پر نظر ثانی کرنی چاہئے اور اس معاملے پر ریاستی میڈیا کی تشویش دور کرنی چاہئے۔ (اطہر مسعود وانی )