کالا باغ ڈیم ۔ ریفرنڈم کرایا جائے

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر

بودے دلائل کی بنا پر کالا باغ ڈیم نہیں بنا کر پاکستان کو معاشی تباہی سے دوچار کیا جا رہا ہے۔ وہ کام کیا جا رہا ہے جو پاکستان کے صرف دشمن ہی کر سکتے ہیں (جیسا کہ بھارت کشمیر میں کر رہا ہے) یہ کام پاکستان کی چاروں اسمبلیوں کے چند ہزار افراد جو طرح طرح کے غیر جمہوری‘ ہتھکنڈوں سے صوبائی اسمبلیوں میں پہنچ گئے ہیں وہ کر رہے ہیں جبکہ انکی اس حرکت کا نقصان 18 کروڑ پاکستانیوں کو پہنچ رہا ہے۔ ہماری اسمبلیوں کے اکثر ممبران جس کردار کے ہیں وہ سورج سے زیادہ نظر آنے والا ہے۔ ان لوگوں کا توڑ کرنے کا ایک پرامن‘ آسان اور فوری طریقہ کالا باغ ڈیم بنایا جائے یا نہ بنایا جائے‘ کے سوال پر ریفرنڈم ہو سکتا ہے جو صوبائی نہیں آل پاکستان ہو۔ یقین ہے کہ عوام اپنی موت کے وارنٹ پر دستخط نہیں کریں گے اور کالا باغ ڈیم بنانے کے حق میں ووٹ دیں گے اور اس طرح پاکستان کے وجود کے خلاف مسلسل کی جانے والی سازشوں میں سب سے زیادہ خطرناک اس سازش کو ناکام بنانے میں کامیاب ہوں گے۔ محب وطن کالم نویس حضرات اس معاملے کو زور و شور سے اخبارات میں اٹھائیں یقیناً وہ راقم سے بہت زیادہ بہتر طریقے سے عوام کا مقدمہ لڑ سکتے ہیں۔ (ظفر عمر خاں مانی)