تحصیل نور پور تھل کے زر عی مسائل

ایڈیٹر  |  مراسلات

مکرمی! تحصیل نور پور تھل بنیادی طور پر زرعی علا قہ ہے جہا ں کی تقریباً 80 فیصد آبا دی دیہاتوں میں آباد ہے۔ علاقہ کی اکثریت کا شکار ہے اگر خدانخواستہ کسی سال فصلیں بارش نہ ہونے کی وجہ سے کم ہوں تو تمام کاروبار مفلوج ہو کر رہ جاتے ہیں۔ تحصیل نور پور تھل کا علاقہ زیادہ تر یک فصلی ہے یہاں پر سب سے زیادہ چنے کی فصل کاشت کی جاتی ہے۔ علاقہ کی خوشحالی کا دارومدار بروقت بارشوں پر ہوتا ہے اگر بر وقت باران رحمت ہو جائے تو خوشحالی ورنہ خشک سا لی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ ماضی میں اس علاقہ میں زراعت کی ترقی کیلئے کوئی خاطر خواہ اقدام نہیں کئے گئے۔ یہاں پر ہزاروں ایکڑ رقبہ ناقابل کاشت ہے لیکن اکثر علاقوں میں رقبہ بنجر پڑا ہے اگر حکومتی سطح پر نواحی مواضعات رنگپور بگھور، آدھی کوٹ، چن گنگھن، وڈھلانوالہ اور ملحقہ چکوک میں سیم و تھور کے خاتمے کیلئے موثر اقدامات کئے جائیں تو یہاں معاشی آسودگی میں اضافہ ہو سکتا ہے اور سیم مزید قیمتی اراضی کو نقصان نہیں پہن چا سکے گا۔ علا قہ کے اکثر کاشت کار ان پڑھ ہیں جن کی زراعت سے متعلق جدید معلومات نہ ہونے اور بدلتے موسموں اور الات کے متعلق بروقت آگاہی نہ ہونے کی وجہ سے بھی زمینیں خراب ہو رہی ہیں جس کے نتیجے میں علاقہ کا کاشت کار خوشحال ہونے کی بجائے بدحالی کا شکار ہونے کے سا تھ ساتھ زرعی قرضوں اور آڑھتیوں کے ہا تھوں بری طرح مقروض ہو رہا ہے ضرورت اس امر کی ہے کہ ا ن اَن پڑھ کسانوں کو جدید ضروریات و معلومات سے مستفید کیا جائے۔
 حکومتی سطح پر زراعت کی ترقی مختلف دیہاتوں میں ان کے ماحول اور مقامی زبان میں کاشتکاروں کو ان کی زمین اور موسم کے مطابق فصلیں کاشت کرنے کے طریقہ کار سے آگاہ کیا جائے اور ان کی مالی پریشا نیوں کے خاتمے کیلئے آسان طریقہ کار پر زرعی قرضہ جات جاری کئے جا ئیں اس طر ح سے کاشتکار بہتر طریقہ پر اپنی زمینوں پر فصلیں کاشت کر سکیں گے اور علاقہ تھل سبز ا نقلاب لانے کے ساتھ ساتھ یہ اقدامات وطن عزیز میں خوشحالی لانے کا پیش خیمہ ثابت ہوں گے۔
(راجہ نور الٰہی عاطف، نور پور پھل۔ 0306-6344727)