مدت ملازمت میں توسیع

مکرمی! چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس افتخار چودھری نے درخواسست دی تھی کہ ان کی مدت ملازمت میں 22ماہ کی توسیع کی جائے جو سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کی غیرقانونی نظربندی میں گزارے۔ یہ ایک جائز اور درست مطالبہ ہے جو بغیر کسی حجت کے منظور ہو جانا چاہئے۔ لیکن چند اعتراضات لگا کر درخواست واپس کر دی گئی۔ جبکہ یہاں ملک و قوم دشمن دل پسند آمروں کی ریٹائرمنٹ کے بعد ان کی مدت ملازمت میں توسیع کر دی جاتی ہے جبکہ موجود چیف جسٹس ایک درخشاں ہیرا ہیں۔ عوام تو چاہتے ہیں کہ ان کی مدت ملازمت پوری ہونے کے بعد بھی ان کی مدت ملازمت میں مزید توسیع ہو تاکہ وہ عدلیہ میں جو نقائص رہ گئے ہیں انہیں بھی دور کر سکیں۔ انہوں نے اپنے عادلانہ اور منصفانہ فیصلوں سے عدلیہ کو ایک نئی زندگی دی اور اسے سربلند کیا ہے۔ بہت سارے سخت نوعیت کے مقدمے ان کے زیرسماعت التوا میں پڑے ہیں اس لئے ان کی موجودگی نہایت اہم اور ضروری ہے۔ (خواجہ جاوید اختر۔ گوجرانوالہ)