قائد اور نظریہ پاکستان سے ناواقف حکمران

مکرمی! افسوس کی بات یہ ہے کہ ہم لوگوں کو ایسے حکمران نصیب ہوئے ہیں جو کہ نظریہ¿ پاکستان سے واقف ہی نہیں۔ جسے دیکھو لوٹ کھسوٹ کر کے مادر وطن کو اندر سے کھوکھلا کر کے بیرون ملک عیش کر رہے ہیں۔ ٹھنڈے ممالک میں اپنا سیاہ دھن جمع کرتے ہوئے درحقیقت عوام کے اعتماد کا مذاق اڑاتے ہیں جو ان پر اعتماد کرتے ہیں۔ کچھ عرصہ پہلے ہمارے ایک سیاست دان نے فرمایا کہ قائداعظمؒ تو خود ایف اے پاس تھے۔ ذرا سوچئے کہ قائداعظمؒ پر مضمون تو دوسری تیسری کلاس کے بچے لکھتے ہیں ان کو بھی معلوم ہوتا ہے کہ قائداعظمؒ کی تعلیم کتنی تھی بعض سیاست دان سمجھتے ہیں کہ قائداعظمؒ پاکستان کو ایک سیکولر ریاست بنانا چاہتے تھے۔ انہیں یہ معلوم ہونا چاہئے کہ مشترکہ ہندوستان ایک سیکولر ملک ہی ہوتا اور قائداعظمؒ جیسی دور اندیش شخصیت اس بات سے واقف تھی۔ اسی وجہ سے انہوں نے فرمایا کہ ہمیں صرف زمیں کا ایک ٹکڑا نہیں چاہئے بلکہ ایک ایسا ملک چاہئے جس میں ہم اسلام کے اصولوں کو لاگو کر کے ان کے مطابق زندگی گزاریں لیکن جو لوگ قائداعظمؒ کی عملی قابلیت سے ناواقف ہیں وہ ان کے فرمودات کو کہاں جانتے ہونگے!
(بشریٰ غفور، گورنمنٹ فاطمہ جناح کالج چونا منڈی، لاہور)