برائے توجہ

مکرمی! وزیر اعظم صاحب ایک بار پھر ہفتے میں دو چھٹیوں اور گھڑیاں آگے کرنے والے ہیں جبکہ پچھلے برسوں بھی ایسا کرنے سے کوئی فائدہ نہیں ہوا تھا بلکہ افسر لوگوں کی تو موجیں لگ جاتی ہیں۔ سرکاری گاڑیوں پر دو دن خوب سیر سپاٹے کرتے ہیں جس سے بجلی کی کچھ بچت تو ہو سکتی ہے مگر پٹرول کا خرچ بہت بڑھ جاتا ہے اور گھڑیاں آگے کرنے سے یہ ہوتا ہے کہ کہیں دس بجے ہوتے ہیں اور کہیں گیارہ بجے ہوتے ہیں جس سے ذہنی ٹینشن ہوتی ہے اور کاروبار پر بہت اثر پڑتا ہے۔ آگے کون سے ہمارے ملک میں کاروبار ہو رہے ہیں۔ لہٰذا گزارش ہے کہ وزیر اعظم صاحب کاروباری لوگوں کا بھی خیال کرتے ہوئے ایسا نہ کریں۔
(ملک غلام سرورP-37 غلہ منڈی، تاندلیانوالہ)