محکمہ سوئی گیس کے ایم ڈی کی ملازمت میں توسیع

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر
محکمہ سوئی گیس کے ایم ڈی کی ملازمت میں توسیع

مکرمی! اتنی اندھیر نگری مچی ہوئی ہے کہ عوام کے اداروں کو اِس طرح نوچا جا رہا ہے کہ مرنا کسی کو یاد ہی نہیں۔ جب سپریم کورٹ یہ فیصلہ دے چکی کہ دوہری شہریت کے حامل کسی بھی شخص ادارئے کی سربراہی نہیں سونپی جاسکتی اور اِس حوالے سے نادرا اور پی آئی اے کی مثالیں بھی سامنے آئی ہیں کہ اِن کے سربراہان دوہری شہریت کی وجہ سے اپنے اداروں کی سربراہی سے سبکدوش کر دیئے گئے۔ حالیہ دنوں میں انسانی حقوق فرنٹ انٹرنیشنل نے ایک رپورٹ تیار کی تو اُس رپورٹ میں محکمہ سوئی گیس میں مچائی گئی اندھیر نگری کے حوالے سے بہت سے حقائق سامنے آئے۔ ہماری رپورٹس کسی بھی شخص کی ذاتیات کے حوالے سے نہیں ہوتیں بلکہ اِس کے پیچھے مفادِ عامہ ہوتا ہے۔ پھر بھی کسی کو اِن رپورٹس کی صحت کے حوالے سے تحفظات ہوں تو عدالتوں کے دروازے کھلے ہیں۔ انسانی حقوق فرنٹ انٹرنیشنل نے کبھی بھی کوئی ایسا کام نہیں کیا جو کہ ملک و ملت کے خلاف ہو۔سوئی گیس کے ایم ڈی کو تعینات کرنے کا اختیار وفاقی حکومت کا ہے جب کہ موجودہ ایم ڈی نے یہ تعیناتی بورڈ آف ڈائریکٹرز کے ذریعے کروائی ہے۔ موجودہ ایم ڈی صاحب کی مدتِ ملازمت پوری ہوگئی تھی لیکن انھوں نے دوبارہ ایکسٹینشن لے لی۔ (اشرف عاصمی ایڈووکیٹ ہائی کورٹ چیئرمین انسانی حقوق فرنٹ انٹرنیشنل)