یک سنگھے … (افسانے)

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر
یک سنگھے … (افسانے)

ہاروکی مور اکامی وہ جاپانی ادیب ہیں جن کی تحریریں نہ صرف جاپان میں سب سے زیادہ پسند کی جاتی ہیں بلکہ انکی تحریروں کو دنیا بھر میں پذیرائی حاصل ہے۔ انکی تحریریں دیومالائی‘ جادوئی حقیقت پسندی‘ پراسراریت‘ تشکیک اور ذاتی تجربات کے امتزاج پر مبنی ہیں۔ انکی مقبولیت کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ انکی کتابوں کا ترجمہ دنیا کی لگ بھگ پچاس زبانوں میں ہوچکا ہے اور جن ممالککی زبانوں میں ترجمہ ہوا ہے‘ ان ملکوں میں انہیں بے حد پذیرائی ملی۔ ہاروکی موراکامی کے کام میں موسیقی کے علاوہ دیگر فنون و علوم اور کھیلوں پر بھی گہری نظر ہونے کی وجہ سے انکے کنایے کم نہیں ہیں۔ انکی پانچ تحریروں پر فلمیں بھی بن چکی ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ’’میں تخیل کی طاقت پر یقین رکھتا ہوں اور یہ بھی حقیقت ہے کہ دنیا میں صرف ایک سچائی ہی نہیں ہے‘ حقیقی دنیا اور دوسری غیرحقیقی دنیا دونوں ہی ساتھ ساتھ انتہائی مضبوطی سے ایک دوسرے سے جڑی ہوئی ہیں۔ بعض اوقات ایک دوسرے میں مدغم بھی ہوجاتی ہیں۔ اگر میں چاہوں تو ایک سے دوسری دنیا میں آجا بھی سکتا ہوں۔ میری کہانیاں کبھی ایک طرف کی داستان سناتی ہیں اور کبھی دوسری طرف کی۔ ‘‘ اس میں کوئی شک نہیں کہ انکی تحریروں میں قاری کو ان دونوں دنیائوں میں کوئی فرق محسوس نہیں ہوتا جبکہ انکی کتابوں کے مترجم قیصر نذیر خاور کا مزاج تو گوروں کا سا ہے لیکن ان کا مطالعہ اتنا وسیع ہے کہ عالمی ادب میں جو انہوں نے پڑھا ہے‘ وہ انتہائی خوبصورت اور انوکھا ہے۔ انہوں نے روسی‘ انگریزی‘ فرانسیسی‘ امریکی‘ ہسپانوی اورجاپانی ادب کے نگینوں کا چیدہ چیدہ ترجمہ کرکے اردو کے قاری کو ادب کی ایک نئی دنیا سے روشناس کرایا ہے۔انہوں نے جس زبان کا بھی ترجمہ کیا ‘ وہ حقیقت کے اس قدر قریب ہوتا ہے کہ قاری اس میں محو ہوکر رہ جاتا ہے اور خود کو اسی خطہ کا باسی تصور کرتا ہے۔یکے سنگھے بھی اپنے اندر کچھ ایسا ہی سحر لئے ہوئے ہے۔ 255 صفحات پر مشتمل افسانوں کی اس خوبصورت کتاب کی قیمت 500/- روپے ہے جسے دیدہ زیب ٹائٹل کے ساتھ مکتبہ فکر و دانش‘ B- 491 فیصل ٹائون لاہور نے شائع کیا ہے۔ تقسیم کار: تخلیقات ‘ بیگم روڈ لاہور۔ فون: 0300-4241601- 042-37238014۔ (تبصرہ : سلیم اختر)