انرجی کے بحران نے ساری قوم کا جینا حرام اور معیشت کو تباہ کردیا

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر
انرجی کے بحران نے ساری قوم کا جینا حرام اور معیشت کو تباہ کردیا

مکرمی! اگر سابق صدر جنرل ضیاالحق مرحوم‘ محترمہ بینظیر بھٹو (مرحومہ)‘ جنرل پرویز مشرف‘ میاں نوازشریف جو اب بھی تیسری بار وزارت عظمیٰ کے منصب پر فائز ہیں‘ کالاباغ ڈیم بننے دیتے تو آج پاکستان میں بجلی اور پانی کے بحران پیدا نہ ہوتے۔ کالاباغ ڈیم کا مسئلہ فنی نہیں سیاسی بنا دیا گیا ہے جس کا حل بھی بالآخر سیاسی قیادت ہی کو نکالنا ہے۔ انرجی کے بحران نے ساری قوم کا جینا حرام اور معیشت کو تباہ برباد کرکے رکھ دیا ہے۔ حکومت کو اپنی نااہلی یا مس مینجمنٹ کا اعتراف کرنا چاہئے۔ ایسے حالات میں پانی کی قلت کا بحران تو سب کچھ تباہ کر دے گا۔ حکومت کو توانائی اور پانی کی قلت کے ممکنہ خدشات سے بچائو کیلئے طویل المعیاد منصوبہ بندی کرنا ہوگی۔(چودھری اکمل چیمہ (سابق تحصیل و ضلع ناظم) سیالکوٹ۔)