بلدیاتی الیکشنز میں بھی موروثی سیاست عروج پر

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر

مکرمی! وطن عزیز میں قومی و صوبائی و سینیٹ کے الیکشنز کی طرح بلدیاتی الیکشنز میں بھی موروثی سیاست عروج پر ہے۔ ایک وارڈ میں باپ امیدوار ہے تو دوسرے میں بیٹا، ایک وارڈ میں چچا تو دوسرے میں بھتیجا، ایک وارڈ میں ایک بھائی تو دوسرے وارڈ میں دوسرا بھائی، ایک وارڈ میں بہنوئی تو دوسرے میں سالا امیدوار ہے۔ یعنی نچلی سطح کی سیاست میں بھی موروثی سیاست پروان چڑھ رہی ہے۔ سابقہ و نئے امیدواروں نے لنگوٹے کس لئے ہیں اپنی اپنی برادریوں کو اکٹھا کیا جا رہا ہے گلی محلوں میں کارنر میٹنگوں کا اہتمام ہو رہا ہے۔ دراصل ہونا تو یہ چاہیے کہ وطن عزیز میں فوری طور پر ایسا قانون بنا دیا جائے کہ کسی بھی برادری، خاندان سے بلدیاتی کونسلر، ایم پی اے یا میا این اے 2 مرتبہ سے زیادہ الیکشن میں حصہ نہیں لے سکتا۔(وحید یوسف جنجوعہ وزیر آباد)