خادم پنجاب سکولوں کالجوں کی لیبارٹریز کی بھی خبر لیں

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر

مکرمی!میری بہن مقامی گورنمنٹ کالج کی بی ایس سی (BSc) کی طالبہ ہے۔ پورا سال باقاعدگی سے کالج جاتی رہی۔ لیکچرار صاحبہ صرف اس بنا پر پریکٹیکل کروانے سے معذوری ظاہر کرتی رہیں کہ ایک تو کلاس کی تعداد پوری نہیں۔ دوسرے لیب میں سامان موجود نہیں۔ زووالوجی اور باٹنی کے پریکٹیکلز میں صرف پروسیجر ہی لکھوانے پر اکتفا کیا گیا۔ امتحانات میں بھی جو ایگزامینر صاحب آئے انہوں نے بھی مفاہمتی رویہ اختیار کئے رکھا۔ سامان موجود نہ پا کر منگوانے کی زحمت نہیں کی اور صرف پروسیجر ہی لکھوا لیا۔ اس طرح طالبعلم شاید پاس تو ہو جائیں لیکن کیا مستقبل میں وہ کامیاب اور ملک کےلئے فائدہ مند ثابت ہو سکیں گے۔ میری وزیراعلیٰ پنجاب جناب میاں شہباز شریف سے گزارش ہے کہ تعمیراتی منصوبوں سے کچھ وقت نکال کر سرکاری سکولوں اور کالجوں کی سائنس لیبارٹریز کا دورہ بھی کریں۔(نگینہ خالد، محلہ رسول نگر شیخوپورہ)