محمد عربی کی غلامی یا امرےکہ کی غلامی

مکرمی! آج سے تقریباً 62 سال پہلے اس پاک سرزمین کے لئے اس کے دشمنوں اور اسلام دشمنوں نے جو منصوبہ بنایا تھا آج اس کی تکمیل ہمارے اپنوں ہی ہاتھوں ہوچکی ہے وہ ملک جس کی خاطر کئی لاکھ مسلمانوں نے اپنی جان کی قربانی دے کر ہماری آزادی کو مدنظر رکھا تاکہ ہمیں ہمارے پورے حقوق اور مذہبی آزادی مل سکے اور آزاد انسانوں کی طرح رہ سکیں۔ کیا آج ہم نے ان کے کسی ایک مقدس ومعطر خون کے قطرے کی قدر کی؟ کیا یہ پاک سرزمین جس کے لئے کئی مسلمانوں نے اس پاک سرزمین کو اپنے مقدس خون سے معطر کیا آج اس کی قیمت ڈیڑھ ارب ڈالر ہے یاد رکھیں۔ ابھی کچھ وقت باقی ہے اگر ابھی بھی ہم نے اس ملک کو نہ بچایا تو روز قےامت شہدائے پاکستان کا ہاتھ ہوگا اور ہمارا گریبان ہو گا میں یہ پوچھنا چاہتا ہوں کہ کیا یہ ملک ہم نے محمد عربی کی غلامی کے لئے حاصل کیا یا امریکہ کی غلامی کیلئے! یقیناً جواب یہی ہوگا محمد عربی کی غلامی کے لئے تو پھر ہمیں اپنے گریبان مےں جھانکنا چاہیے کہ آج ہم کس کی غلامی کر رہے ہیں۔ خدا کرکے اس قوم کو محمد علی جناحؒ جےسا موسیٰ مل جائے جو اس قوم کو ان فرعونوں سے نجات دلائے کاش اس قوم کو کوئی اقبالؒ جیسا عیسیٰ اور اسرافیل مل جائے جو اس قوم کو زندہ کرے اب فیصلہ اس قوم کے پاس ہے امریکہ کی غلامی یا سرور کائنات کی غلامی حافظ محمد طاہر سٹوڈنٹ آف D.M.G اسلامک یونیورسٹی داتا نگر بادامی باغ لاہور فون نمبر 0313- 697750