بے کار گھڑےاں

مکرمی ! فیصل آباد کا پرانا نام لائل پور تھا۔ یہ واقعہ جب پاکستان اور ہندوستان اےک تھے تب کا ہے۔ ایک سکھ دوپہر کے وقت گھڑیال چوک جا کرگھڑی کی سویاں پکڑ کر بیٹھ گیا گزرنے والوں نے پوچھا ”سردار جی، اتنی گرمی میں شکِر دوپہر وہاں بیٹھے کیا کررہے ہو؟ تو سردار جی گویا ہوئے ”میں گھڑی کی سویاں پکڑ کر بیٹھی ہوں۔ مسئلے کہتے ہیں سکھوں کے بارہ بجتے ہےں۔ آج بارہ نہیں بجنے دوں گا۔“ سننے والوں نے بتایا ”یہی تمہارے بارہ بجنے کا ثبوت ہے۔ سکھ تو چلے گئے پاکستان بن گیا لیکن وہ اپنی سوچ اور دماغ یہاں چھوڑ کر چلے گئے ہمارا حکومتی ٹولہ کبھی سردار جی کی طرح سویاں پکڑ کر آگے کرتے ہیں کبھی پیچھے کو گھما دیتے ہیں۔انسان چونکہ اشرف المخلوقات اور خطا کا پتلا بھی ہے اس لئے ہر قسم کی بے وقوفیاں کرتا ہے لیکن شرماتا ہے نہ پچھتاتا ہے۔ ظہور فاطمہ بلوچ محلہ تاجپورہ شمالی خوشاب