آﺅ معاشرے سے نتھی ہو جائیں

مکرمی! جیسا کہ ہر باشعور اور محب وطن شہری جانتا ہے کہ پاکستان اس وقت بدترین مسائل کا شکار ہے ہر ادارہ توڑ پھوڑ کا شکار ہے۔ زراعت، تعلیم، صحت اور صنعت کا ڈھانچہ مکمل طور پر زمین بوس ہے اور بحیثیت قوم ہم خوشی خوشی اجتماعی خود کشی کی طرف رواں دواں ہیں اس تباہی بربادی کی بے شمار وجوہات ہیں لیکن میں نے محسوس کیا ہے اس کی سب سے بڑی وجہ عام لوگوں کی وطن عزیز کے مسائل سے لاتعلقی ہے اس وقت کروڑں نوجوان اور لاکھوں ادھیڑ عمر لوگ ویلیاں روٹیاں کھاتے ہیں۔ نوجوان تعلیم مکمل کر کے یا ادھوری چھوڑ کر سہانے خواب دیکھتے ہیں مزدوری کرنے کا مشورہ دینے والوں کا یہ نوجوان کا مذاق اڑاتے ہیں۔ پڑھے لکھے لوگ جو خوشحال ہیں اپنے بچوں کو سیٹ کر کے سمجھتے ہیں کہ ہم آزاد ہیں قوم جائے جہنم میں۔ یہ لوگ شاید نہیں جانتے کہ خدا نہ کرے اگر اس بدقسمت قوم پر برا وقت آیا تو کوئی بھی نہیں بچے گا خاص طور پر وہ لوگ جو جائز و ناجائز پیسہ اکٹھا کر کے سمجھتے ہیں کہ ہم کسی بحران سے بچ نکلیں گے وہ غلط فہمی کا شکار ہیں۔
(منظور احمد ۔گوجرانوالہ)