ٹریفک کا مسئلہ سارا دن پیش رہتا ہے

مکرمی! سیالکوٹ کی بڑھتی ہوئی آبادی کے نتیجے میں اس شہر کا کوئی علاقہ بمشکل ایسا ہو گا جو تجاوزات سے بچا ہو مین بازار‘ چوک علامہ اقبال گرین وڈ سٹریٹ پہائی بازار شاہ سیداں شاید ہی کوئی بازار ایسا ہو جو بری طرح تجاوزات کی زد میں نہ آیا ہو۔ پہائی بازار اور تحصیل بازار کے بارے میں تو یہ شنید ہے کہ یہاں تاجروں نے اپنی دکانوں کے سامنے والا حصہ پھل فروشوں چائے بنانے والوں وغیرہ کو روزانہ کرایہ پر دے رکھا ہے۔ جس سے یہاں خرید و فروخت کرنے والوں اور گزرنے والوں کو مشکلات پیش آتی ہیں اسی طرح ان علاقوں میں طاقتور افراد اور گروہوں نے کئی مقامات پر سڑک کے کناروں پر قبضہ کر رکھا ہے جس سے ٹریفک کا مسئلہ سارا دن پیش رہتا ہے کئی دفعہ ہٹائے جانے کے باوجود یہ لوگ پھر ان جگہوں پر آ جاتے ہیں ظاہر ہے یہ سب کچھ عملہ تہ بازاری اور دوسرے با اثر افراد کی اعانت کے بغیر نہیں ہو سکتا۔ کسی ٹاسک فورس کی نظر ادھر نہیں اٹھتی ضلعی اور تحصیل ایڈمنسٹریٹروں کو اس صورتحال کا سنجیدگی سے نوٹس لینا چاہئے۔ ان علاقوں میں ڈیوٹی پر مامور ٹریفک پولیس اہلکار بھی اپنے فرائض منصبی سے غافل نظر آتے ہیں جس کے لئے ان افراد کو بھی کچھ کہنے کی ضرورت ہے۔ اس طرح ٹریفک کا مسئلہ سارا نہیں تو کم از کم تھوڑا ہی حل ہو سکتا ہے۔ (جہانگیر اختر بٹ 247 ایس ماڈل ٹاﺅن اگوکی سیالکوٹ )