ساتھی کی موت پر بے حسی

مکرمی! ملک کی سپیریئر سول سروس کے ایک اہم رکن ایس کے محمود گذشتہ دنوں انتقال کر گئے۔ ان کی شخصیت اور خدمات کے حوالے سے اگر مبالغہ آرائی نہ ہو تو ایوان اقتدار سے لے کر بے شمار سرکاری اداروں کے جملہ سٹاف تک ان کی نیک نامی کا شہرہ رہا ہے لیکن اس کے ساتھ ہی قابل افسوس امر یہ ہے کہ اس قدر سینئر ساتھی اور ایک باوقار سابق بیورو کریٹ کی وفات پر سول سروس کے ارکان میں سے کسی نے کوئی ریفرنس منعقد کرنے کی زحمت گوارہ کی اور نہ ہی کسی حکومتی یا اپوزیشن عہدہ دار نے ملکی تاریخ کا مشاہدہ رکھنے والے اس جہاندیدہ کے لئے چند تعزیتی کلمات کہنا ضروری سمجھے ہیں۔ اس قدر ناشناسی کی وجہ غفلت بھی ہو سکتی ہے تاہم ایک عقیدت مند ہونے کے ناطے میرے فرض منصبی کا یہی تقاضا تھا کہ اصحاب مسندِ اقتدار کی توجہ اس جانب دلائی جائے۔
(خواجہ حسین احمد۔ لاہور)