رحمدل کون؟

ایڈیٹر  |  ڈاک ایڈیٹر
رحمدل کون؟

مکرمی! تقریباً تین سو سال پہلے مذہبی فسادات میں یورپ میں لاکھوں لوگ تہ تیغ ہوئے۔ سکیولر ازم کی چھتری تلے پناہ لی تو سکھی ہوئے۔ تب سے وہ انسانی ترقی اور بھلائی کے کاموں میں لگے نظر آتے ہیں کہ اللہ ان پر مہربان ہے اللہ فساد پسند نہیں کرتا۔ اللہ مفسدین کو پسند نہیں کرتا، قرآن ہے۔ اس کی برکت سے مغربی ممالک قابل رشک ہیں۔ وہاں اتنی انساینت ہے کہ جیسے اسلامی اقدار ان کے عمل میں ہیں۔ رسول کی امت نہ ہوتے ہوئے بھی وہ سنت اللہ پر گامزن نظر آتے ہیں اور وہ نعمتوں سے مزین ہیں۔ ’’خدا نے آج تک اس قوم کی حالت نہیں بدلی‘‘ کی مثال سامنے ہے۔ انگریزی کا محاورہ ہے ’’Give the dog a Bad name and hang it‘‘ ہم نے سیکولر ازم کو محدود مطلب پہنا کر اسے گالی بنا دیا ہے اور دین کی تعریف بھی خود ساختہ نام ہے۔ قرآن میں اللہ دین کو رحمدلی بتا رہا ہے تو بات ختم اور یہ رحم دلی مغرب میں بدرجہ اتم عروج پر ہے، افریقہ ایشیا میں کہیں مصیبت ہو ان کی امداد پہنچتی ہے وغیرہ۔ یہ سب کہنے کی ضرورت پیش آئی نوائے وقت 29.12.14 کی شہ سرخی پڑھ کر کہ ’’سیکولر طبقہ دہشتگردی کے الزامات سے دینی قوتوں کا راستہ روکنا چاہتا ہے: سمیع الحق‘‘۔ہے ناں عجیب بات۔ (معین الحق 266-P ماڈل ٹائون لاہور)