شاہ حسین ؒ .... تنویر ظہور

ایڈیٹر  |  مراسلات

شاہ حسینؒ فقیر نمانا
میرا سائیں‘ سچا سائیں
اس نے پیار کی دولت بانٹی
ہم بے کاسہ لوگوں میں
اس نے میرے ہونٹوں سے
دکھ دو ہے سلگائے
اس نے میری دکھتی رگ پر اپنے
حرف کی پوریں رکھیں
اس کی سوچیں اس دھرتی پر کھلنے والے پھول
ایسے پھول کہ جن کی خوشبو کل دنیا میں پھیلی
شاہ حسینؒ فقیر نمانا
تخت نشیں ہر دل میں
اس کی شاہی کا سکہ
پیار بھرا اک بول!