کراچی اور بلوچستان کی تشویشناک صورتحال

ایڈیٹر  |  مراسلات

مکرمی!میں آپ کے روز نامہ کی وساطت سے یہ کہنا چاہتا ہوں کہ پاکستان کی معاشی شہ رگ کراچی میں جاری فسادات ،بد امنی،بھتہ خوری ،اغوا برائے تاوان کے بڑھتے ہوئے واقعات ،ٹارگٹ کلنگ اور لوگوں کے گھروں میں گھس کر فائرنگ کرنے ،اہل خانہ کو ہراساں کرنے اور بے گناہ لوگوں کی قتل و غارت کی صورتحال انتہائی تشویشناک ہے۔ اب تک ہزاروں کی تعداد میںبے گناہ لوگ ٹارگٹ کلنگ میں جان سے ہاتھ دھوبیٹھے ہیں۔ اسی طرح بلوچستان جوکہ ملک کے سب سے بڑ ے اور معدنی وسائل سے مالا مال ہے کی انتہائی مخدوش صورتحال ،وہاں جاری علٰیحدگی کی تحریکوں،بد امنی ،ٹارکٹ کلنگ ،اغوا کاری اور مسخ شدہ لاشوں کی بر آمد گی انتہائی افسوسناک ہے۔بلوچوں کے ساتھ مسلسل ناانصافی ہو رہی ہے۔وفاقی حکومت اس صوبہ کے عوام کو ان کے جائز و قانونی حقوق دینے سے گریزاں ہے جس کے نتیجے میں بلوچ عوام میں نفرت ،مایوسی ،بغاوت اور احساس محرومی جیسے جذبات پیدا ہو رہے ہیں اور صوبے میں علٰیحدگی کی تحریکیں زور پکڑ رہی ہیں۔لاپتہ افراد جس میں ایک بڑی تعداد خواتین اور بچوں کی بھی شامل ہے اور مسخ شدہ لاشوں نے صوبہ بھر کے عوام میں غیظ و غضب کو بھڑکانے میں جلتی پر تیل کا کام کیا ہے۔ بلوچستان کے مسائل کو حقیقی طور پر سمجھ کر اور ان کے تدارک کے لئے اقدامات کئے جائیں۔بلوچستان کے مسائل کے حل کے لئے اصل فریق کے ساتھ مذاکرات شرو ع کئے جائیں۔صوبے میں بسنے والے لوگوں کے تحفظ و اطمینان کے لئے اقدامات کئے جائیں۔
(سمیع الرحمان ضیائ،منصورہ لاہور)