اے پی این ایس کی ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس ، حکومت کی جانب سے واجبات کی عدم ادائیگی پر افسوس کا اظہار

اے پی این ایس کی ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس ، حکومت کی جانب سے واجبات کی عدم ادائیگی پر افسوس کا اظہار

لاہور( پ ر) آل پاکستان نیوز پیپرز سوسائٹی کی ایگزیکٹیو کمیٹی نے وفاقی حکومت کی طرف سے زبانی اور تحریری یقین دہانیوں اور وزیراعظم پاکستان  نواز شریف کی واضح ہدایات کے باوجود حکومت کے ذمہ  اخبارات اور اشتہاری ایجنسیوں کے واجبات کی عدم ادائیگی پر انتہائی افسوس کا اظہار کیا ہے۔ اخبارات کے واجبات حالیہ اشتہارات ‘ تحلیل شدہ ایجنسیوں کے ذمہ واجبات‘ وزارت اطلاعات اور2008-12  کے عرصے کے دوران جاری کئے گئے اشتہارات کی طویل عرصہ سے واجب ادائیگیوں سے متعلق ہیں۔ اے پی این ایس نے وزیراعظم سے درخواست کی  ہے کہ وہ اپنی ہدایات پر پوری طرح عمل درآمد کروائیں۔ ایگزیکٹیو کمیٹی نے اے پی این ایس کے صدر کو اس ضمن میں فوری طورپر قومی سطح پر اخبارات کی ہڑتال اور وفاقی حکومت کے اشتہارات کی معطلی سمیت  تمام ضروری اقدامات کرنے کا اختیاردیا ہے۔ ایگزیکٹیو کمیٹی نے ایک خصوصی قرارداد میں مسعود حامد کی رحلت پر رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے اے پی این ایس اور اخباری صنعت کے لئے ان کی خدمات پر خراج تحسین پیش کیا ہے۔ ایگزیکٹوکمیٹی نے متعلقہ صوبائی کمیٹیوں کی سفارشات پر غور کرتے ہوئے روز نامہ چناب ٹائم فیصل آباد‘ روزنامہ دنیا سرگودھا‘ روز نامہ میسنجر کراچی‘ روزنامہ مسافت لاہور‘ روزنامہ نوائے شمال سیالکوٹ اور روزنامہ پریس کانفرنس گوجرانوالہ کی ایسوسی ایٹ رکنیت کی منظوری دی۔ اجلاس میں روزنامہ منشور سرگودھا اور روزنامہ کے ٹو گلگت کے پبلشر کی تبدیلی کی منظوری بھی دی  گئی۔ ایگزیکٹو کمیٹی نے سکروٹنی کمیٹی کی سفارش پر روزنامہ دنیا لاہور‘ ماہنامہ جہانگیر ورلڈ ٹائم لاہور اور ماہانامہ سائوتھ ایشیا کراچی کو مکمل رکنیت دینے کا فیصلہ کیا۔ اجلاس  میں اسکروٹنی کی سفارش پر روز نامہ اسلام پشاور‘ ماہنامہ سھار کوئٹہ ‘فنانشل ڈیلی کراچی‘ روزنامہ تکمیل پاکستان لاہور‘ روزنامہ صداقت لاہور اور روزنامہ ٹرسٹ سہاراانٹرنیشنل لاہور کی رکنیت منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا۔ ایگزیکٹو کمیٹی نے ایڈور ٹائزنگ کمیٹی کی رپورٹ منظور کرتے ہوئے میسرز میگ ماس کمیونکیشن اسلام آباد  اور  میسرز زوش باکس پرائیوٹ لمیٹڈ کراچی کی ایسوسی ایٹ شپ کی منظور دی ۔ کمیٹی نے میسرز اے بی سی ایڈور ٹائز اسلام آباد اور میڈیا ایکسسز پرائیویٹ لمیٹڈ کراچی کی ری اسٹرکچرنگ کی منظوری دی۔ اجلاس میں مندرجہ ذیل اراکین نے شرکت کی۔ حمید ہارون صدر‘ رمیزہ مجید نظامی سینئر نائب صدر‘ سرمد علی سیکرٹری جنرل ‘ رحمت علی رازی جوائنٹ سیکرٹری‘ ہمایوں طارق فنانس سیکرٹری‘ محسن ممتاز(روزنامہ آفتاب) عدنان ظفر(روزنامہ آج)سید تراب شاہ(روزنامہ اوصاف) وسیم احمد(روزنامہ عوام ‘ کوئٹہ) یونس ریاض(روزنامہ بیوپار) ڈاکٹر جبار خٹک(عوامی آواز)‘ ارشد زبیری(روزنامہ بزنس ریکارڈر) سید تنویر حسین(روزنامہ سٹی فور ٹی ٹو) نجم الدین شیخ(روزنامہ کائنات) قاضی اسد عابد(روز نامہ عبرت)‘ اعجاز الحق(روزنامہ ایکسپریس) جاوید مہر شمسی(روزنامہ کلیم) فرقان ہاشمی(روزنامہ خبریں)‘ مشتاق قریشی(ماہنامہ نئے افق) سلمان قریشی(ماہنامہ نیا رخ)‘ عمر مجیب شامی(روزنامہ  پاکستان)‘ فیصل زاہد ملک(روزنامہ پاکستان آبزرو) عارف نظامی( پاکستان ٹو ڈے)‘ الیاس شاکر(روزنامہ  قومی اخبار)‘ جمیل اطہر(روز نامہ تجارت) وقار یوسف عظیمی(روحانی ڈائجسٹ)‘ خوشنود علی خان(صحافت اسلام آباد) ہمایوں گلزار(روزنامہ سیادت)‘ پروفیسر ایس بی حسن(انویسٹمنٹ اینڈر مارکیٹنگ)‘مجیب الرحمن شامی صدر  سی پی این ای اور علی حسن نقوی(روزنامہ ڈان) نے خصوصی دعوت پر اجلاس میں شرکت کی۔