کسی پر ہاتھ نہیں اٹھایا‘ پارٹی لیڈر کیخلاف کچھ برداشت نہیں کر سکتا: چودھری غفور

لاہور (لیڈی رپورٹر) ارکان اسمبلی بشریٰ گردیزی اور ثمینہ خاور حیات پر ہاتھ اٹھانے کے و اقعہ کی چودھری غفور نے سختی سے تردید کرتے ہوئے کہا کہ میں نے کسی پر ہاتھ نہیں اٹھایا۔پارٹی لیڈرکے خلاف کچھ برداشت نہیں کر سکتا۔ وزیر اعظم گیلانی کے صاحبزادے عبدالقادر گیلانی نے کہا کہ اگر کسی خاتون نے کوئی بینر اٹھایا تھا تو سپیکر اسمبلی اس پر نوٹس لیتے۔ تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ ایسے واقعات رونما نہیں ہونے چاہئیں۔ صبا صادق نے کہا کہ میں اپوزیشن کے بنچوں پر تھی میں نے چودھری غفور کو مارتے ہوئے نہیں دیکھا تاہم کسی کے لیڈر کو غدار کہنا کہاں کا انصاف ہے۔ زیب جعفر نے کہا کہ ثمینہ خاور اور بشریٰ گردیزی عورت ہونے کا فائدہ نہ اٹھائیں۔ عظمیٰ بخاری‘ صغیرہ اسلام ساجدہ میر نے کہا کہ یہ سب پلاننگ کے تحت ہوا۔ سکینہ شاہین‘ نسیم ناصر خواجہ‘ شازیہ اشفاق‘ غزالہ رانا‘ محمودہ چیمہ‘ دیبا مرزا ودیگر نے کہا کہ ایوان میں صرف قومی ایشوز پر بات ہونی چاہئے۔ اپوزیشن ارکان سمیل کامران‘ سامعہ امجد‘ فائزہ اصغر‘ زوبیہ رباب‘ خدیجہ فاروق‘ آمنہ الفت اور دیگر نے نوائے وقت سے گفتگو میں کہا کہ ایئرپورٹ سکینڈل سے بری ہونے کے بعد چودھری غفور آپ سے باہر ہو گئے ہیں۔ ثمینہ خاور اور بشریٰ گردیزی نے کہا کہ وزیر اعلیٰ چودھری غور کے خلاف ایکشن لیں۔