پاکستانی قوم پانی کے مسئلہ پر بھارت سے جنگ کیلئے تیار ہے: واٹر موومنٹ

لاہور (نیوز رپورٹر+ خصوصی نامہ نگار) پاکستانی حکومت کی مسلسل خاموشی کی وجہ بھارت نے پاکستانی دریاﺅں پر قبضہ کرنے کیساتھ ڈیمز بنا کر پاکستان کو بجلی فروخت کرنے کے منصوبے پر تیزی سے عملدرآمد کر رہا ہے۔ اگر وفاقی حکومت نے بھارت کی سازشوں کو بے نقاب نہ کیا تو بھارت ایک روز پاکستان کے تمام دریاﺅں پر اپنا قبضہ کر لیگا۔ گزشتہ روز انجینئر میاں سلطان محمود، ڈاکٹر جاوید یونس اوپل اور پاکستان واٹر موومنٹ کے کنوینئر حافظ سیف اللہ منصورنے نوائے وقت سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ بھارتی آبی دہشت گردی کے خلاف تحریک کے سلسلہ میں ہم قریہ قریہ، شہر شہر، بستی بستی جائیں گے اور قوم کو متحد و بیدار کریں گے، دریاﺅں میں پانی نہیں آئے گا تو خون بہے گا۔ پاکستانی قوم پانی کے مسئلہ پر بھارت سے جنگ کے لئے بھی تیار ہے۔ پاکستانی دریاﺅں پر بھارتی ڈیموں کی تعمیر کے مسئلہ پر ورلڈ بنک و دیگر عالمی اداروں کی خاموشی افسوسناک ہے۔ حکمران بھارتی ڈیموں کی تعمیر روکنے کیلئے عملی اقدامات کریں۔ محض ڈیموں کے ڈیزائن پر اعتراضات کرنا درست نہیں ہے۔ بھارت کو کوئی حق نہیں کہ وہ پاکستانی دریاﺅں پر ڈیم بنائے یا سرنگوں کے ذریعہ ان کا رخ موڑنے کی کوشش کرے۔ دریں اثناءحافظ سیف اللہ منصور، حافظ خالد ولید اور ڈاکٹر ابووقاص نے کہا کہ پاکستانی قوم اپنے دریاﺅں کے پانیوں پر بھارتی قبضہ کو کسی صورت برداشت نہیں کرے گی۔ ہم سمجھتے ہیں کہ مقبوضہ کشمیر سے آٹھ لاکھ بھارتی فوج نکالے بغیر پانیوں کا مسئلہ حل نہیں ہو سکتا۔ بھارتی ”واٹر بم“ کے توڑ کیلئے سنجیدہ کوششیں کرنا ہونگی۔
واٹر موومنٹ