چودھری نثار نے ویڈیو بیان دیکر بیٹے کے کیس کو خراب کر دیا: یوسف گیلانی

چودھری نثار نے ویڈیو بیان دیکر بیٹے کے کیس کو خراب کر دیا: یوسف گیلانی

لاہور(خبر نگار)سابق وزیراعظم یوسف رضاگیلانی نے کہا ہے کہ وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار نے ان کے مغوی بیٹے علی حیدر گیلانی کی جس ویڈیو کا ذکر کیا وہ انہیں نہیں ملی البتہ چوہدری نثار نے ویڈیو بارے بیان دیکر کیس کو خراب کر دیا ہے جس سے ان کے بیٹے کی رہائی میں مزید پیچدگیاں پید اہو گئی ہیں۔ حکومت سے مطالبہ ہے کہ وہ ویڈیو قوم کو بھی دکھائے۔ انہوں نے انکشاف کیا کہ علی حیدر گیلانی کی رہائی کیلئے انکے طالبان سے مذاکرات مثبت سمت چل رہے تھے جنہیں چوہدری نثار کے بیان سے دھچکہ پہنچا۔ علی حیدر گیلانی کی ایک ویڈیوانکے پاس بھی ہے جوانکے اور طالبان کے درمیان ثالثی کرانے والوں نے انہیں دی تھی پھر وہ بھی وہ ویڈیو قوم کے سامنے رکھ دیں گے جس کے بعد قوم فیصلہ کرلے گی کہ حکومت کی ویڈیو اور انکی ویڈیو میں سے کون سی مستند ہے۔وہ سابق چیف سیکرٹری جاوید قریشی کے انتقال پر ان کے گھر تعزیت کے بعد میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے۔سید یوسف رضا گیلانی نے کہاکہ انہیں چوہدری نثار سے گلہ ہے کہ وہ انکے رابطے میں تھے لیکن انہوں نے اتنے حساس معاملے پر ملنے والی ویڈیو پر انہیں اعتماد میں نہیں لیا اور میڈیا کے چند لوگوں کو ویڈیو کے کچھ حصوں سے آگاہ کردیا اور یہ بیان اس موقع پر دیا  جب طالبا ن کے رہا کئے جانے والے لوگوں کے بدلے ہمارے قیدیوں کی رہائی ہونی تھی۔انہوںنے کہاکہ چوہدری نثار کو بیان دیکر کیا فائدہ ہوا ۔انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ حکومت اورفوج ایک صفحہ پر ہوتے تو انہیں یہ بیان دینے کی ضرورت پیش نہ آتی۔انہوں نے کہاکہ انہیں ملنے والی ویڈیو میں طالبان نے کہاکہ انہوں نے علی حیدر گیلانی کو اغواء کرکے گیلانی حکومت کی طرف سے سوات مالاکنڈ آپریشن کا بدلہ لے لیا ۔انہوںنے کہا کہ حکومتی ویڈیو کو خود چوہدری نثار نے خود ہی غیر مستند قرار دے دیا ہے اور ویسے بھی ایک مغوی کا گن پوائینٹ پر لیا گیا بیان وہی ہوگا جو اغواء کار چاہیں گے۔انہوں نے کہاکہ پیپلز پارٹی کی قیادت کو مسلسل جان کا خطرہ ہے اسلئے جب بلاول بھٹو نے پنجاب آنا ہو گا وہ آجائیں گے۔