’’کشمیر کی آزادی تک جدوجہد جاری رہے گی، پالیسی تبدیل کرنا ہو گی‘‘

لاہور (خبر نگار) کشمیر کی آزادی تک جدوجہد جاری رہے گی، جب تک ہم ایک قوم نہیں بنیں گے تکمیل پاکستان کا ایجنڈا مکمل نہیں ہوگا، بھارتی حکومت کا رویہ جارحانہ ہے نریندرمودی کیلئے نرم گوشہ رکھنے والوں کو بھی اب سمجھ آگئی ہے کہ ہمیں کشمیر کی پالیسی کو تبدیل کرنا پڑے گی۔ ان خیالات کا اظہار مختلف جماعتوں کے رہنمائوں نے آزاد کشمیر کے سابق وزیر اور پیپلز پارٹی پنجاب کے ایڈیشنل جنرل سیکرٹری غلام محی الدین دیوان کی رہائش گاہ پر بھارتی جارحیت کے خلاف یوم سیاہ کے حوالے سے منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔تقریب سے تحریک انصاف پنجاب کے صدر چوہدری اعجازاحمد،مسلم لیگ (ن) کی رہنمازرقا جاوید ،مسلم کانفرنس کے رہنما مرزاصادق جرال،  اعجازاحمد کیانی ، حافظ غلام فرید ،پیپلزپارٹی لاہور کی صدر ثمینہ خالد گھرکی ،سابق پارلیمانی سیکرٹری برائے قانون طارق شبیر طارق میو سمیت دیگر رہنماؤں نے بھی خطاب کیا۔ پیپلزپارٹی پنجاب کے جنرل سیکرٹری تنویر اشرف کائرہ نے کہاہے کہ ذوالفقارعلی بھٹو کی کشمیر پالیسی کو بلاول بھٹو جاری رکھے ہوئے ہیں جب تک کشمیر ی آزاد نہیں ہو جاتے ہماری جدوجہد جاری رہے گی۔