لوڈشیڈنگ کے خاتمے کیلئے مسلم لیگ (ن) انرجی پلان تیار کر لیا ‘ ایشیائی ترقیاتی بینک کی رپورٹ کو بنیاد بنایا جائیگا

لاہور (آئی این پی) مسلم لیگ (ن) نے اقتدار میں آنے سے پہلے ہی ملک سے بجلی بحران کے خاتمے کے لئے ایشیئن ڈویلپمنٹ بنک کی رپورٹ کے مطابق انرجی پلان تیار کر لیاہے۔ وزارت پانی و بجلی اور وزارت پٹرولیم کو ختم کر کے ایک نئی خودمختارانرجی کی وزارت بنائی جائے گی۔ ملک میں بلڈنگ انرجی کوڈز کا نظام بھی رائج کیا جائے گا“ فاسٹ ٹریک بنیادوں پر 600 میگا واٹ تک پن بجلی کے منصوبے بھی شروع کئے جائیں گے۔ نئی پالیسی پر 50 کروڑ ڈالر کی لاگت آئے گی۔ ذرائع کے مطابق مسلم لیگ (ن) نے ایشیئن ڈویلپمنٹ بینک کی جانب سے 2010ءمیں بجلی کے بحران کے خاتمے کے حوالے سے تیار کی جانے والی رپورٹ کے تحت ملک کو بجلی کے بحران سے نکالنے کی منصوبہ بندی کر لی ہے، منصوبہ بندی کے تحت توانائی کے شعبے میں بہتری اور زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاری کے لئے وزیراعظم کا انرجی مشیر مقرر کیاجائے گا، بجلی کی فروخت کے بعد ریکوری کو ہر صورت یقینی بنایا جائے گا۔ صنعتوں اور کمرشل سیکٹر کو بجلی دی گئی سبسڈی ختم کر کے صرف غریب عوام کو گھریلو سیکٹر میں سبسڈی دی جائے گی جبکہ اس کے ساتھ ساتھ سرکلر ڈیٹ کو فوری طور پر ختم کر کے ریکوری اورانرجی فنانسنگ فنڈ قائم کیا جائے گا۔ ذرائع کے مطابق (ن) لیگ کی جانب سے تیار کی جانے والی پالیسی میں یہ تجویز بھی دی گئی ہے کہ انرجی کی پیداوار کو بہتر اور پیداوار بنانے کے لئے قانون سازی بھی کی جائے گی، ملک میں بلڈنگ انرجی کوڈز کا نظام بھی رائج کیا جائے گا۔ تیار کئے جانے والے پلان کے تحت 2700 میگا واٹ کے تھرمل پاور کی تنصیب ترجیحی بنیادوں پر کی جائے گی، فاسٹ ٹریک بنیادوں پر 600 میگاواٹ تک پن بجلی کے منصوبے بھی شروع کئے جائیں گے جبکہ بجلی کی بچت کو یقینی بنانے کے لئے بھی سخت سے سخت اقدامات کئے جائیں گے۔
انرجی پلان