شہباز شریف کا ارکان پنجاب اسمبلی کے ترقیاتی فنڈز پر دو سال کیلئے پابندی لگانے کا فیصلہ

شہباز شریف کا ارکان پنجاب اسمبلی کے ترقیاتی فنڈز پر دو سال کیلئے پابندی لگانے کا فیصلہ

لاہور (فرخ سعید خواجہ) نامزد وزیراعظم محمد نوازشریف کی پیروی میں نامزد وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے نومنتخب ارکان پنجاب اسمبلی کے ترقیاتی فنڈز پر دو سال کے لئے پابندی لگانے کا فیصلہ کیا ہے دو سال بعد اس فیصلے پر ازسرنو غور کیا جائے گا۔ پنجاب کے خزانے پر بوجھ صوبائی محکمے ختم کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔ مسلم لیگ (ن) کے مرکزی سیکرٹریٹ 180/Hماڈل ٹاﺅن میں میاں شہبازشریف کی صدارت میں اہم اجلاس ہوا۔ جس میں 2013-2014ءکے بجٹ کو عوام دوست بنانے کی غرض سے رانا ثناءاللہ خان سربراہی میں خصوصی کمیٹی تشکیل دی گئی۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں شہبازشریف نے ہدایت کی کہ غیرترقیاتی اخراجات میں 30سے 45فیصد تک کمی لانے کے لئے ضروری ہے کہ خزانے پر بوجھ محکموں کو دوسرے محکموں میں ضم کر دیا جائے۔ رانا ثناءاللہ خان کی سربراہی میں بیٹھنے والی کمیٹی مختلف محکموں کو دوسرے محکموں میں ضم کرنے کے حوالے سے تجاویز دے گی۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں چیئرمین پی اینڈ ڈی، صوبائی سیکرٹری خزانہ اور دیگر سینئر بیورو کریٹس بھی موجود تھے۔ شہبازشریف کو مالی سال 2013-2014ءکے لئے تیار کئے جانے والی صوبائی بجٹ کے خدوحال بارے میں بریفنگ دی گئی۔ شہبازشریف نے اجلاس کے شرکاءکو بریفنگ دی کہ آنے والا بجٹ ایسا ہونا چاہئے جس سے مصائب میں مبتلا لوگوں کو ریلیف محسوس ہو اور وہ بجٹ کو عوام دوست بجٹ تصور کریں۔ اجلاس میں میاں شہبازشریف نے آئندہ مالی سال کا ترقیاتی بجٹ ”بلاک ایلوکیشن“ فارمولے کے تحت بنانے کی ہدایت کی۔
شہبازشریف/ پابندی