پنجاب: 873 بلدیاتی ملازمین کیخلاف انکوائریاں جلد مکمل کرنے کی ہدایت

لاہور (میاں علی افضل سے) پنجاب بھر میں ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی میں ملوث لوکل گورنمنٹ کے 873 ملازمین کے زیر التواء کیسز سے متعلق وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے انکوائریاں مکمل کرکے جلد رپورٹ پیش کرنے کے احکامات جاری کردیئے، محکمہ سروسز اینڈ جنرل ایڈ منسٹریشن کی جانب سے تمام کمشنر اور ڈی سی اوز کو ہدایات جاری کردی گئیں ہیں۔ کئی کیس اینٹی کرپشن کے پاس تھے جو لوکل گورنمنٹ کو بھجوا دئیے گئے کمشنرز اور ڈی سی او کو انتباہ کیا گیا ہے جو افسر انکوائریوں میں تاخیری حربے استعمال کررہے ہیں انہیں آخری وارننگ دی جاتی ہے وہ ایسا نہ کریں۔ کوئی بھی کیس لمبے عرصے کیلئے رکنا نہیں چاہئے۔ ضوابط کی خلاف ورزی کے مرتکب ملازمین کیخلاف پیڈ ایکٹ 2006 کے مطابق کارروائی کی جائے کسی بھی ملازم کی موت کی صورت میں اس کی انکوئری میں اعلیٰ افسروں سے رابطہ کیا جائے اور اسے بھی مکمل کیا جائے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی میں ملوث پنجاب میں لوکل گورنمنٹ کے 35 اضلاع میں 873 ملازمین کی انکوئری زیر التواء ہیں جن میں لاہور میں 36، قصور میں 44، شیخوپورہ میں 61، ننکانہ میں 24، ساہیوال میں 30، پاکپتن میں 26، اوکاڑہ میں 36، گوجرانولہ میں 35، گجرات میں 16، ناروال میں 13، سیالکوٹ میں 17، منڈی بہائولدین میں 21، حافظ آباد میں 5، راولپنڈی میں 21، جہلم میں 7، اٹک میں 167، چکوال میں 2، سرگودھا میں 26، خوشاب میں 6، میانوالی میں 10، بھکر میں 15، فیصل آباد میں 38، ٹوبہ ٹیک سنگھ میں 17، جھنگ میں 15، چینوٹ میں 3، ملتان میں 46، خانیوال میں 10، وہاڑی میں 7، لودھراں میں 11، بہاولپور میں 26، بہاولنگر میں 13، رحیم یار خان میں 27، ڈی جی خان میں 32، مظفر گڑھ میں 6، لیہ میں 4 انکوئریاں زیر التواء ہیں۔