پنجاب میں حکومت سازی کیلئے ہارس ٹریڈنگ نہیں کرینگے: پیپلز پارٹی

اسلام آباد+ لاہور (خبرنگار+مانیٹرنگ نیوز+ ایجنسیاں) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنمائوں نے کہا ہے کہ پنجاب میں حکومت سازی کے لئے ہارس ٹریڈنگ نہیں کریں گے۔ وفاقی وزیر پارلیمانی امور ڈاکٹر بابر اعوان نے کہا ہے کہ تصادم کی سیاست جمہوریت کے مفاد میں نہیں۔ مفاہمتی پالیسی کے تحت پنجاب میں مسلم لیگ ن کو حکومت دی گئی تھی اب میاں برادران کو عدالت عظمیٰ نے نااہل قرار دیا ہے پیپلز پارٹی نے نہیں۔ سابق صوبائی وزیر خزانہ پنجاب تنویر اشرف کائرہ نے کہا کہ گورنر راج حقیقت میں عوامی راج ہے۔ میاں برادران کو نظربند کرنے کے اقدام کی نوبت نہیں آئے گی۔ عوام کو سڑکوں پر لانا افسوسناک ہے۔ پیپلز پارٹی پنجاب کے صدر رانا آفتاب احمد خان نے کہا کہ مسلم لیگ ن والے محترمہ بینظیر بھٹو اور صدر زرداری کی تصاویر پھاڑنے سے باز رہیں وگرنہ پیپلز پارٹی کے کارکن بھی مشتعل ہو جائیں گے۔ سابق صوبائی سینئر وزیر راجہ ریاض نے کہا کہ پنجاب میں پیپلز پارٹی کی اکثریت ہے اور حکومت بنانا ان کا حق ہے۔ سنیٹر صفدر عباس اور ناہید خان نے کہا ہے کہ نادیدہ قوتیں مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی میں دوریاں پیدا کرنے کی کوشش کر رہی ہیں۔ پیپلزپارٹی پنجاب کے سیکرٹری سمیع اللہ خان نے کہا ہے کہ ذاتی اقتدار کیلئے احتجاج اور توڑ پھوڑ کی سیاست کرنا اور ملک کو خرابی کی طرف لیجانا مناسب نہیں ہے۔ وہ گزشتہ روز لاہور پریس کلب میں سابق پارلیمانی سیکرٹری اور رکن اسمبلی چودھری کامران علی خان کی پیپلز پارٹی میں ساتھیوں سمیت شمولیت کے موقع پر پریس کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے۔اس موقع پر چودھری کامران کے ساتھی‘ پیپلز پارٹی لاہور کے صدر چودھری اصغر‘ رکن ضلع کونسل لاہور ملک عثمان سلیم اور دیگر موجود تھے۔