پنجاب اسمبلی سیکرٹریٹ کی چابیاں ’’دبائو‘‘ پر گورنر ہاؤس کے حوالے

لاہور (سلمان غنی) پنجاب اسمبلی سیکرٹریٹ نے گورنر ہاؤس کے دبائو پر پنجاب اسمبلی کے مین گیٹ‘ اسمبلی ہال اور کیفے ٹیریا ہائوس سمیت اہم دفاتر کی چابیاں گورنر ہائوس کے سپرد کر دیں تاحکم ثانی بند رہیں گے جبکہ گورنر ہائوس نے اسمبلی سیکرٹریٹ کے ملازمین کو تنبیہ جاری کی کہ اگر انہوں نے بالواسطہ یا بلاواسطہ سابقہ حکومت کے احکامات کی تعمیل کی یا کسی بھی معاملہ میں مدد کی تو انہیں اپنے اس عمل کے حوالہ سے جوابدہ ہونا پڑے گا۔ مذکورہ احکامات اور اقدامات کے بعد گزشتہ روز پنجاب اسمبلی سیکرٹریٹ میں خوف و ہراس طاری رہا جبکہ حکام اور اہلکاروں کی بڑی تعداد اسمبلی سیکرٹریٹ کے دروازے بند ہونے کو بنیاد بناتے ہوئے سیکرٹریٹ سے غائب رہی جبکہ دوسری جانب سپیکر رانا اقبال نے اسمبلی کے ذمہ داران کی جانب سے اسمبلی سیکرٹریٹ کے بعض اہم حصوں کی چابیاں گورنر ہائوس پہنچانے کے عمل پر حکام کی سرزنش کی اور کہا کہ اسمبلی سیکرٹریٹ ایک آزاد ادارہ ہے جو گورنر ہائوس کا پابند نہیں لہٰذا گورنر ہاؤس کو چابیاں فراہم کرنے والے حکام سے بازپرس ہو گی البتہ اسمبلی حکام کا کہنا ہے کہ اسمبلی کی موجودگی میں سپیکر اسکے کسٹوڈین ہے۔ یاد رہے کہ اس سے قبل ملکی سیاسی تاریخ میں ایسی مثال نہیں ملتی کہ اسمبلی سیکرٹریٹ کی چابیاں گورنر ہائوس یا حکومت نے اپنے قبضے میں لی ہوں۔