لاہور ہائیکورٹ، ستوکتلہ تھانہ کے ایس ایچ او کی زبردستی شادیوں کے حوالے سے دائر درخواست کیس کی سماعت میں چیف جسٹس نے آّئی جی پنجاب کو طلب کرلیا۔

لاہور ہائیکورٹ، ستوکتلہ تھانہ کے ایس ایچ او کی زبردستی شادیوں کے حوالے سے دائر درخواست کیس کی سماعت میں چیف جسٹس نے آّئی جی پنجاب کو طلب کرلیا۔

لاہور کے علاقے ستوکتلہ کے رہائشی محمد اقبال نے تھانے کے ایس ایچ او غلام دستگیر کے خلاف درخواست دائر کی ہے۔ درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ غلام دستگیر زبردستی شادیاں کرنے اور چوریوں کی واردات میں ملوث ہے۔ کیس کی سماعت کے دوران ریمارکس دیتے ہوئے چیف جسٹس کا کہنا تھا کہ اگر پولیس اس طرح کے اقدامات کرے گی تو ان پر کون اعتبار کرے گا۔ چیف جسٹس نے آئی جی پنجاب جاوید اقبال کو طلبی کا نوٹس جاری کرتے ہوئے کیس کی سماعت چار جولائی تک ملتوی کردی۔