یوٹیوب پر گستاخانہ خاکوں والے لنکس موجود ہیں پابندی برقرار رکھی جائے: مذہبی رہنما

لاہور (خصوصی نامہ نگار) مختلف مذہبی جماعتوں کے رہنمائوں نے حکومت پاکستان کی جانب سے یوٹیوب پر پابندی ختم کرنے کے اعلان پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے  یوٹیوب پر اب بھی گستاخانہ خاکوں والے لنکس موجود ہیں، پوری پاکستانی قوم یوٹیوب پر پابندی اٹھانے کے سخت خلاف ہے اور گستاخ ویب سائٹوں پر مکمل پابندی عائد دیکھنا چاہتی ہے۔ نبی اکرمؐ کی حرمت کا تحفظ ہر مسلمان کے ایمان کا حصہ ہے۔ حکومت کو اپنے اس فیصلہ پر نظرثانی کرنی چاہئے اور یوٹیوب پر پابندی برقرار رکھنی چاہئے۔ جے یو پی کے مرکزی سیکرٹری جنرل قاری زوار بہادر، امیر جماعت اہلحدیث حافظ عبدالغفار روپڑی، جے یو آئی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات مولانا امجد خان، جماعۃ الدعوۃ کے رہنما مولانا ادریس فاروقی نے نوائے وقت سے گفتگو میں کیا۔  انہوں نے کہا یوٹیوب پر پابندی اٹھانے کی باتیں انتہائی افسوسناک ہیں۔ ان سے پوری پاکستان قوم کے جذبات مجروح ہو رہے ہیں۔ انہوں نے کہا صلیبی و یہودی جان بوجھ کر منظم سازشوں اور منصوبہ بندی کے تحت قرآن پاک کی بے حرمتی اور شان رسالتؐ میں گستاخیاں کرتے ہیں اور پھر انہیں سوشل نیٹ ورکس کے ذریعے پھیلایا جاتا ہے۔ حکومت پاکستان کو ان سازشوں کو ناکام بنانے کیلئے اپنا بھرپورکردار ادا کرنا چاہئے اور محب رسولؐ ہونے کا ثبوت دینا چاہئے۔